151

بکنگھم پیلس لندن کی سڑک پرعالمی کرکٹ میلے کی منفرد و رنگا رنگ افتتاحی تقریب

Spread the love

لندن (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک)

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کا میگا ایونٹ شروع ہونے سے ایک رات قبل بکنگھم پیلس

کے سامنے عالمی کرکٹ میلے کی انتہائی منفرد اور رنگا رنگ افتتاحی تقریب

منعقد ہوئی، جس میں کرکٹ کے اس عالمی میلے میں شرکت کرنیوالے تمام 10

ممالک کی نامور شخصیات نے اپنے اپنے ملک کی نمائندگی کی ۔ نوبیل امن انعام

یافتہ ملالہ یوسفزئی اور ٹیسٹ کرکٹر اظہر علی نے پاکستان کی نمائندگی کی،

دونوں نے سکسٹی سیکنڈز چیلنج کرکٹ میں بھی حصہ لیا، افتتاحی تقریب 4 ہزار

کے لگ بھگ شائقین شریک ہوئے۔ تقریب کے میزبان معروف فنکار اور سابق

انگلش آل راؤنڈر اینڈریو فلنٹوف نے خوب رنگ جمایا، ابتداء میں تمام 10 ٹیمو ں

کے کپتانوں کی آمد ہوئی۔ ورلڈ کپ 2015 کے فاتح کپتان آسٹریلیا کے مائیکل

کلارک ٹرافی کے ہمراہ پہنچے، ٹرافی کو تقریب میں سٹیج پر نمایاں رکھا گیا،

تقریب کا اختتام بھی موسیقی کی جھنکار میں ہوا۔ تقریب سے نوبیل امن انعام یافتہ

ملالہ یوسفزئی نے خطاب بھی کیا، شاہی محل کے باہر پاکستانیوں کی بڑی تعداد

اپنی ٹیم کو سپورٹ کرنے کیلئے موجود تھی۔ سبز رنگ کی شرٹ پہن کر پاکستان

کیساتھ اظہار یکجہتی کرنیوالی ملالہ کا کہنا تھا مجھے بچپن سے کرکٹ کا شوق

تھا،چاچا کرکٹ بھی تقریب میں توجہ کا مرکز رہے۔

افتتاحی تقریب کو ‘اوپننگ پارٹی’ کا نام دیا گیا تھا جس کے باقاعدہ آغاز سے قبل

ویسٹ انڈیز کے عظیم بیٹسمین سر ویوین رچرڈز نے کہا ویسٹ انڈیز کو ہرانا آسان

نہیں۔ بھارت اور پاکستان کے علاوہ میزبان انگلینڈ بھی بڑی ٹیم ہے جو ٹورنامنٹ

جیتنے کی اہلیت رکھتی ہے۔

افتتاحی تقریب میں ورلڈ کپ کو رقص و موسیقی کا تڑکا لگایا گیا۔ جس میں نامور

کرکٹرز کی موجودگی میں انٹرٹینمنٹ سے شائقین کرکٹ لطف اندوز ہوئے۔ انگلش

کپتان اوئن مورگن نے کہا ہم ایونٹ کیلئے بہت پر جوش ہیں۔ بھارتی کپتان ویرات

کوہلی نے کہا ہمارے انگلینڈ میں بے شمار فینز ہیں، جس سے فائدہ اٹھانے کی

کوشش کریں گے۔ جنوبی افریقا اور ویسٹ انڈیز کے کپتانوں نے بھی جیت کی

امیدوں کا اظہار کیا۔ ورلڈ کپ کی سرپرائز تقریب کی ٹکٹیں پہلے ہی فروخت

ہوچکی تھیں اور قرعہ اندازی کے ذریعے 4 ہزار شائقین کو ایونٹ میں شرکت کا

پروانہ جاری کیا گیا تھا۔ یہ ٹکٹ کسی دوسرے کو فروخت نہیں کیے جاسکتے تھے

بلکہ جس کے نام پر جاری ہوئے وہی خوش نصیبوں میں شامل تھا۔

ایک گھنٹے پر محیط تقریب کو پوری دنیا میں برطانوی وقت کے مطابق 5 بجے

شام براہ راست نشر کیا گیا اور دو سو ملکوں میں کروڑوں ناظرین نے اسے براہ

راست دیکھا۔ ورلڈ کپ کے ایم ڈی اسٹیو ایلورتھی نے کہا اوپننگ پارٹی نے ہر اس

پہلو کا احاطہ کیا جو اس ٹورنامنٹ کو خاص بناتا ہے،

قبل ازیں 60 سیکنڈز چیلنج میچ میں ملالہ یوسفزئی اورٹیسٹ کرکٹر اظہر علی نے

پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے 38 رنز اسکور کیے۔60 سیکنڈز چیلنج کی فاتح

انگلنڈ کی ٹیم رہی جس نے 74رنز اسکور کیے، جبکہ ویسٹ انڈیز نے سر ویوین

رچرڈز کی قیادت میں 47 رنز بنائے۔ بھارت کی جانب سے انیل کمبلے اور بولی

ووڈ اسٹار فرحان اختر نے نمائندگی کی اور 19 رنز بنائے۔ سری لنکا کی جانب

سے مہیلا جے وردھنے اور بنگلہ دیش کی نمائندگی عبدالرزاق کے ہمرا خاتون

اداکارہ نے کی۔ آسٹریلیا نے بریٹ لی کی قیادت میں 69 رنز بنائے، جیمز فرینکلن

نے نیوزی لینڈ کیلئے 32 رنز بنائے، جیک کیلس نے جنوبی افریقا کیلئے 48 رنز

بنائے اور انگلینڈ نے کیون پیٹرسن کی قیادت میں 74 رنز بنائے۔انگلینڈ نے 60

سیکنڈز چیلنج میچ میں آسٹریلیا کو پیچھے چھوڑ تے ہوئے کامیابی حاصل کی۔