163

او آئی سی میں بھارت کی کسی بھی حیثیت میں شمولیت نا قابلِ قبول، پاکستان

Spread the love

جدہ (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک)

پاکستان نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ حرمین شریفین کی حرمت یا سلامتی کو

کوئی خطرہ درپیش ہوا تو پاکستان سعودی عرب کیساتھ کھڑا ہو گا، بدھ کو او آئی

سی کی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس کے موقع پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ

محمود قریشی نے سعودی وزیرخارجہ ڈاکٹر ابراہیم بن عبدالعزیز العساف سے

خصوصی ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعلقات، خطے کی صورتحال سمیت باہمی

دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے او آئی

سی کے چودہویں سربراہ اجلاس کی میزبانی پر سعودی ہم منصب کو مبا رکباد دی

پرتپاک خیر مقدم کرنے پر انکا شکریہ بھی ادا کیا۔ وزیر خارجہ نے کہا پاکستان کا

امن و استحکام ، مقد س سر زمین کے امن و استحکام سے منسلک ہے، ولی عہد

شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان نے پاکستانیوں کے دلوں میں گہرے انمٹ

نقوش چھوڑے ہیں، سعودی جیلوں میں قید 2107 قیدیوں کی رہا ئی کے اعلان نے

عوام کے دل جیت لئے ،گزارش ہے ان قیدیوں کی جلد رہائی کیلئے اقدامات کیے

جائیں ۔ شاہ محمود نے پلوامہ واقعہ کے بعد پاک بھارت کشیدگی کے دوران سعودی

عرب کے مصالحانہ کردار کو سراہتے ہوئے مطالبہ کیا او آئی سی میں ہندوستان

کی شمولیت کسی بھی حیثیت میں قابلِ قبول نہیں ،پاکستانیوں کیلئے حج کوٹے کو

دو لاکھ تک بڑھانے پر بھی سعودی ہم منصب کا شکریہ اداکرتے ہوئے شاہ محمود

قریشی نے سعودی ہم منصب کو سعودی عرب میں مقیم ورک فورس اور طلباء کو

درپیش مسائل سے آگاہ کیا اور ان کیلئے خصوصی توجہ کی درخواست کی۔سعودی

وزیرخارجہ نے او آئی سی کی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس میں شرکت پر

شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں پاکستا نی کمیونٹی کو درپیش

مسائل کے جلد حل کیلئے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔

پاکستان اور انڈونیشیا کا مشترکہ اقتصادی کمیشن کو ازسرنو فعال، دفاع،زراعت

میں فروغ تعاون اور مصر کا دوطرفہ تجارت بڑھانے پر اتفاق

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے انڈونیشیا کے ہم منصب سے ملاقات کی جس

میں دوطرفہ تعلقات اور اہم علاقائی وبین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ،شاہ

محمود کا کہنا تھا پاکستان انڈونیشیا کو انتہائی اہم ملک سمجھتا ہے ،ہم دوطرفہ

تعاون کو مزید فروغ دینا چاہتے ہیں ، ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے

وزرائے خارجہ نے پاکستان اور انڈونیشیا کے مابین مشترکہ اقتصادی کمیشن کو

ازسرنو فعال بنانے سمیت دفاع ، زراعت ، ٹیکنالوجی اور تعلیم کے شعبوں میں

دوطرفہ تعاون بڑھانے پر بھی اتفاق کیا گیا، بعدازاں وزیر خارجہ شاہ محمود

قریشی نے مصر کے ہم منصب سے بھی ملاقات کی ، جس میں دوطرفہ تعلقات

اور اہم علاقائی وبین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، مشرق وسطیٰ کی

صورتحال اور مسلم امہ کو درپیش مسائل پر بھی بات چیت کی گئی ۔ وزیر خارجہ

شاہ محمود قریشی نے کہا خطے میں قیام امن کیلئے مصر کی کاوشیں قابل تحسین

ہیں، ملاقات میں پاکستان اور مصر کے درمیان دوطرفہ تجارت بڑھانے پر بھی

اتفاق کیا گیا، شاہ محمو دقریشی کا اپنے مصری ہم منصب سے مزید کہنا تھا ہم

مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے دورہ پاکستان کے منتظر ہیں ،جبکہ مصری

وزیر خارجہ نے انسداد دہشت گردی میں پاکستان کی کاوشوں کو سراہا ، اقوام

متحدہ اور دیگر عالمی فورمز پر پاکستان اور مصر کے قریبی تعاون پر بھی

تعریف کی۔