188

مقبوضہ کشمیر،بھارتی فورسز کی فائرنگ ، برہان وانی کے ساتھی ذاکر موسیٰ سمیت 2 نوجوان شہید

Spread the love

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے

کشمیری عوام میں آزادی کی نئی روح پھونکنے والے شہید برہان وانی کے ساتھی

ذاکر موسی سمیت دو 2 افراد کوشہید کردیا۔کشمیری میڈیا کے مطابق قابض بھارتی

فورسز نے ظلم و بربریت جاری رکھتے ہوئے ضلع پلواما میں گھر گھر تلاشی اور

محاصرے کے دوران ایک گھر کو دھماکے سے اڑا دیا۔قابض بھارتی فوج نے نام

نہاد آپریشن کے نام پر فائرنگ کر کے 2 کشمیریوں کو شہید کردیا جس میں ذاکر

موسیٰ بھی شامل ہیں جو عظیم نوجوان حریت پسند برہان وانی کے قریبی ساتھی

تھے۔ضلع پلوامہ کے علاقے ترال میں ذاکر موسیٰ کی نماز جنازہ ادا کی گئی جس

میں سخت پابندیوں کے باوجود ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ ذاکر

موسی کی شہادت کے بعد احتجاج روکنے کیلئے وادی بھر میں کرفیو نافذ کردیا

گیا،تاہم وادی بھر میں بھارت مخالف مظاہرے پھوٹ پڑے۔ موبائل اور انٹرنیٹ

سروسز بھی معطل کر دی گئی۔ انتظامیہ نے طلباء کو احتجاج سے روکنے کیلئے

پوری وادی کشمیرمیں تمام تعلیمی ادارے بند کرنے کا بھی حکم جاری کیا جبکہ

سرینگر، پلوامہ ، اسلام آباد، شوپیاں ، کولگام ، بڈگام ، گاندربل ، بانڈی پورہ ،

کپواڑہ اور بارہمولہ میںبھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروںکی بھاری تعداد کو

تعینات کردیاگیا ۔دریں اثناء کشمیر یونیورسٹی سرینگراوراسلامی یونیورسٹی آف

سائنس اینڈ ٹیکنالوجی اونتی پورہ نے منعقد ہونیوالے تمام امتحانات ملتوی کر دیئے

ہیں۔