45

امریکہ کو دوبارہ دھمکی دی تو ایران کو نیست و نابودکردینگے ،ٹرمپ کی وارننگ

Spread the love

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ اور ایران کے درمیان کشیدگی میں بدستور

اضافہ ہو رہا ہے اوریہ تنازعہ وائٹ ہائوس اور کیپٹل ہل کا اہم ترین موضوع بن

چکا ہے جن میں جنگ کے امکانات پر قیاس آرائیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اگرچہ

صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے پہلے بیان میں امید ظاہر کرچکے ہیں ایران اور امریکہ کے

درمیان جنگ نہیں ہوگی، تاہم انہوں نے اپنے تازہ ٹوئیٹر پیغام میں ایران کو

وارننگ دی ہے اگر اس نے امریکہ کو دوبارہ دھمکی دی تو اس کا نتیجہ ایران

کے ’’باقاعدہ‘‘ خاتمہ نکلے گا۔ صدر ٹرمپ کا یہ پیغام اسوقت جاری ہوا جب بغداد

میں امریکی سفارتخانے کے قریب ایک راکٹ گرنے کی اطلاع موصول ہوئی۔

امریکی میڈیا کے مطابق صدر ٹرمپ کے جواب میں ایرانی وزیر خارجہ جواد

ظریف نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کہا ’’کبھی ایرانیوں کو دھمکی دینے کی کوشش

نہ کریں۔‘‘ امریکہ اور ایران کے درمیان کشیدگی کا سلسلہ اس وقت شروع ہوا جب

ایک سال قبل صدر ٹرمپ نے ایران کیساتھ ایٹمی معاہدے کو ترک کرنے کا اعلان

کیا تھا۔اس دو ر ان سی آئی اے کے سابق ڈائریکٹر جیمز وولسے نے خیال ظاہر کیا

ہے کہ ایران امریکی مفادات کیخلاف جارحانہ کارروائی کرسکتا ہے۔ ا نہو ں نے

پینٹاگون کو تلقین کی کہ وہ اس خطرے سے نمٹنے کیلئے تیار رہے۔ امریکی

سکیورٹی حکام کے مطابق اس وقت ایران نے کشیدگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے

یورینیم کی افزودگی چار گنا زیادہ کر دی، تاہم اس نے 2015ء کے ایٹمی معاہدے

کے مطابق افزودگی کی حد 3.67 فیصد کو عبور نہیں کیا۔ امریکی ایوان نمائندگان

میں ریپبلکن کے اقلیتی چیف وہپ سیٹو سکیلائز نے ایک بیان میں کہا ہے ایران

حملے کے سنگین نتائج سے آگاہ ہے، تاہم پابندیاں اپنا اثر دکھا رہی ہیں اور ایران

اس کا دبائو محسوس کر رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply