63

پنجاب میں مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم کرنیوالوں کیخلاف کریک ڈان کا فیصلہ

Spread the love

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے کہا ہے کہ کسی کو

قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جاسکتی،صوبے میں قانون کی عملداری

کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے وفاقی وزیر داخلہ

بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ سے ایوان وزیراعلیٰ میں ہونے والی ملاقات کے دوران

کیا، صوبے میں امن و امان اورسکیورٹی کی صورتحال کو مزید بہتر بنانے کے

حوالے سے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔صوبائی وزیر قانون محمد بشارت

راجہ،چیف سیکرٹری ، انسپکٹر جنرل پولیس ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ اور

پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ملاقات میں امن و امان

اور سکیورٹی کی صورتحال کی مزید بہتری کیلئے ہرممکن اقدام اٹھانے اور

پنجاب اور وفاق کے درمیان مربوط کوآرڈینیشن پر اتفاق کیا گیا۔ ملاقات میں مذہبی

منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم کرنے والوں کے خلاف کریک ڈائون کا

فیصلہ کیا گیا جبکہ اشتعال انگیز تقاریر کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی

کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ عوام کے جان و مال کے

تحفظ سے بڑھ کر کوئی ترجیح نہیں ۔پنجاب میں امن و امان کی صورتحال کومزید

بہتر بنانے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائے گا اور قبضہ مافیا کیخلاف بلاامتیاز

آپریشن جاری رہے گا۔ وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ نے کہا کہ

وفاقی وزارت داخلہ امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے پنجاب حکومت کو

سپورٹ کرے گی اور میں پنجاب کے بعد دیگر صوبوں کے بھی دورے کروں گا۔

بعدازاںوزیر اعلیٰ پنجاب سے صوبائی وزیر اطلاعات سید صمصام بخاری نے

ملاقات کی ،جس میں سیاسی امور اورمیڈیاکے واجبات کی ادائیگی کے حوالے

سے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو

کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کا اتحاد چند دن کا مہمان ہے اوربہت جلد غیر فطری

اتحاد اپنے منطقی انجام تک پہنچ جائے گا۔انہوںنے کہا کہ سابق دور میںمختلف

محکموں میں ہونے والی بے ضابطگیوں کوعوام کے سامنے لایا جائے گااور

حکومت اپوزیشن کے غیر جمہوری ہتھکنڈوں کا بھر پور مقابلہ کرے گی۔علاوہ

ازیںوزیراعلیٰ کے زیرصدارت، پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کا جائزہ اجلاس منعقد

ہوا،جس میں ادارے کی کارکردگی اور دیگر امور کا جائزہ لیاگیا ۔وزیراعلیٰ نے

لاہور،ملتان اورراولپنڈی واسلام آبادمیٹروبس سروس کے منصوبوں کے آپریشنل

اخراجات کم کرنے اور حقیقت پسندانہ بنانے کیلئے تجاویز طلب کر لیں۔وزیراعلیٰ

نے آپریشنل اخراجات کو حقیقت پسندانہ بنانے کیلئے سفارشات کی تیاری کیلئے

کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی۔وزیراعلیٰ نے لاہور اورنج لائن میٹروٹرین کے

منصوبے کے آپریشنل اورمینٹیننس کنٹریکٹ کا جائزہ لینے کیلئے اعلی سطح کی

کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی ۔مزید برآںوزیراعلیٰ پنجاب سے صوبائی مشیر

برائے اقتصادی امور و منصوبہ بندی ڈاکٹر سلمان شاہ نے ملاقات کی ،جس میں

صوبے کی معیشت کو مضبوط اورمحکموںکی کارکردگی کو بہتر بنانے کے

حوالے سے اقدامات پر تبادلہ خیال کیاگیااورصوبے کی معیشت کو مستحکم

اورمحکموں کی کارکردگی کو بہتر بنانے کیلئے فوری اقدامات کا فیصلہ کیا گیا۔

وزیراعلی عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ سرکاری وسائل

کے شفاف استعمال کو ہر سطح پر یقینی بنائیںگے۔صوبے کی معیشت کو بہتر بنانے

کیلئے میرا تعاون آپ کے ساتھ ہے ۔ڈاکٹر سلمان شاہ نے کہا کہ پنجاب پاکستان

کیلئے انجن آف گروتھ ہے ۔ پنجاب ترقی کرے گاتومعیشت بھی پھلے پھولے گی۔

انہوںنے کہا کہ معیشت کو بہتربنانے کیلئے اپناتجربہ اورصلاحتیں بروئے کار لاؤں

گا۔ دریں اثناء وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار سے سابق گورنر پنجاب لیفٹیننٹ جنرل

(ر) خالد مقبول نے ملاقات کی ۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو

کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے مختصر عرصے میں نمایاں

کام کیا ہے ۔میں عوام سے براہ راست رابطہ رکھتا ہوں اورعوام کے مسائل کو ذاتی

مسائل سمجھ کر حل کیا جاتا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply