81

بلے بازوں کا کیا قصور….. ؟

Spread the love

چوتھے ایک روزہ میچ میں گرین شرٹس سے بہت امیدیں وابستہ تھیں کہ یہ اس بار

جیت کو اپنے گلے کا ہار ضرور بنائیں گے، کیونکہ پروفیسر اور ملک کی واپسی

کیساتھ ٹیم کی انرجی میں اضافہ ہو گیا تھا ، مگر بائولرز نے ہمارے بلے بازوں

کی محنت پر پانی پھیرتے ہوئے یہ ثابت کردیا کہ وہ انگلش ٹیم کی جانب سے کھیل

رہے تھے۔بدقسمتی سے امام ریٹائرڈ ہرٹ ہوگئے۔مگر داد دینی پڑے گی فخر اور

بابر کو جنہوں نے ٹیم کے سکور کو آگے بڑھانے میں اپنا بھرپور کردار اداکیا۔فخر

نے ہاف سنچری بنائی۔ بابر نے اپنی سنچری پوری کرنے میں کامیاب رہے۔ محمد

حفیظ نے بھی شاندار باری کھیلی اور یہ لگنے ہی نہیں دیا کہ وہ بیماری سے

صحت یاب ہوکر آئے ہیں۔ہمارے مایہ ناز آل رائونڈر شعیب ملک نے بھی 26

گیندوں پر بہترین 41رنز کی باری کھیلی۔ پروفیسر اور ملک جو پریکٹس میچز

کا بھی حصہ نہیں تھے، مگر ان دونوں نے اپنے سینئرز ہونے کا بھرپور حق

اداکیا،مگر بدقسمتی سے ہمارے ہونہار اور سرپرائز پیکج بائولرز نے بلے بازوں

کی ساری محنت پر پانی پھیر دیا۔ 340سکور کا ہدف کوئی چھوٹا ٹارگٹ نہیں

تھا،جوبائولرز نے تھال میں رکھ کر انگلش ٹیم کوپیش کر دیا۔’’انضمام بھائی ‘‘آپ

ایک ’’ عظیم کرکٹر‘‘ ہیں اپ کو تو پتا ہونا چاہئے کہ صرف 150کی سپیڈ سے کام

نہیں چلے گا اس کے لئے تجربہ اور رہنمائی بھی ضروری ہے۔اگر آپ یہ

سمجھتے ہیں کہ جس طرح عمران خان 1992ء کے میگاایونٹ میں آپ کے لئے

کہتے رہے کہ آپ ورلڈ کپ جتوائیں گے، جو آپ نے بلاشبہ جتوایا بھی۔تو اس وقت

آپ کا کوچ ایک پروفیشنل لیگ سپنر اور اپنے وقت کا کپتان بھی تھا۔اسی طرح آپ

کے کپتان عمران خان خود ایک عظیم آل رائونڈر تھے۔آپ کے پاس میانداد ، سلیم

ملک اور عامر سہیل جیسے منجھے ہوئے بلے باز موجود تھے جو آپ کی رہنمائی

کرتے تھے۔مگرشاہین اور حسنین کو اس وقت اس طرح کا کوئی ساتھ میسر نہیں،

حالانکہ اظہر محمود بائولنگ کوچ ہیں، مگر ان کی کسی ایک بائولر پربھی کی

گئی محنت نظر نہیں آئی۔ مجھے یہ سمجھ نہیں آتی کہ آپ کی وسیم اکرم اور وقار

یونس کے ساتھ اتنی گہری دوستی ہے تو آپ ان سے کیوں نہیں گزارش کرتے کہ

وہ تھوڑی دیر کے لئے کیمپ میں چکر لگالیں ۔مجھے یقین ہے کہ ماضی کی یہ

مشہور جوڑی 20منٹ بھی دے تو ان نوجوانوں کے لئے بہت ہیں۔اسی طرح شعیب

اختر آپ کی بہت عزت کرتے ہیں آپ ملک کی خاطر ان سے بھی درخواست

کرسکتے ہیں۔مجھے یاد ہے شین وارن نے یاسر شاہ کو تھوڑا سا ٹائم دیا تو اس کی

بائولنگ میں زبردست نکھار آگیا۔ماضی کے بہترین اور تیز تیرین بائولرز جب

اپنے جونیئرز کو سکھائیں گے تو میرا خیال ہے اس سے دوسری ٹیموں پر نفسیاتی

پریشر بھی پیدا ہوگا۔بہرحال بات لمبی ہوگئی۔وہاب ریاض اور محمد عامر جیسے

پیسرز کی ٹیم میں موجودگی انگلش کنڈیشنز میں انتہائی ناگزیر تھی ابھی وقت نہیں

گزرا میگاایونٹ کے لئے وہاب ریاض کو شامل کرنے کے بعد قسمت ہی ہوگی جو

ہماری ٹیم کی جیت میں بنے۔بات کرتے ہیں امام،فخر،بابر اور آصف کی جو اس

وقت بھر پور فارم میں ہیں اور ان کا ساتھ دینے کے لئے شعیب ملک اور محمد

حفیظ جیسے سینئر آل رائونڈرز کی موجودگی شاہینوں کو مزید خطرناک بنا دیتی

ہے۔اس طرح بیٹنگ کمبی نیشن کے ساتھ اگر وہاب ریاض،محمد عامر، حسن علی،

شاہین اور حسنین کا بائولنگ اٹیک ہو تو خدا کی قسم باقی ٹیموں کو پاکستان کو

شکست دینے کے لئے اپنا پورا زور لگانا ہو گا۔آخر میں ہمارا پلس پوائنٹ شاداب

خان جوہمیں کسی کے لئے بھی آسان شکار نہیں بننے دے گا۔

(تجزیہ:….. حافظ عمر سعید)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply