91

پنجاب حکومت کا ڈی این اے بینک کے قیام کا فیصلہ، سمری منظور

Spread the love

لاہور( نیوزرپورٹر) حکومت نے دہشتگردی سمیت مختلف جرائم کا سراغ لگانے

اور ان سے نمٹنے کیلئے پنجاب میں پہلا ڈی این اے بینک بنانے کی سمری منظور

کر لی، منصوبے پر ابتدائی طور پر 37کروڑ70لاکھ روپے کا تخمینہ لگایا گیا ہے

یہ بات پنجاب فرانزک سائنس لیبارٹری کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر طاہر اشرف

نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتائی انکا کہنا تھا یہ انتہائی اہمیت کا

حامل ڈیٹا بیس ہے، پاکستان میں اس سے پہلے اس کی کوئی پریکٹس نہیں۔ پنجاب

فرانزک سائنس لیبارٹری کے پاس اسوقت 17 ہزار ڈی این اے سیمپلز موجود ہیں

اور موجودہ حالات میں ڈی این اے بینک وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ ڈیٹا بیس سے

رشتہ داروں کے ڈی این اے سے بھی مجرم کا سراغ لگایا جا سکے گا،آئندہ مالی

سال کے بجٹ میں رقم مختص ہونے کے بعد منصوبے پر کام شروع کر دیا جائیگا۔