110

شکریہ میٹ واٹسن ،،،،، We Proud On You Matts-Whatltls

Spread the love

لاہور(جے ٹی این آن لائن خصوصی رپورٹ) معروف ویڈیو بلاگر میٹ واٹسن کی طرف سے
چندروز قبل 20 منٹ دورانیہ کی ویڈیو رپورٹ میں یوٹیوب پر قابل اعتراض ویڈیوز کی تشہیر
اورنامناسب مواد کے پھیلاؤ کے انکشاف کے بعد یوٹیوب انتظامیہ کو بڑا جھٹکا لگ گیا ۔

ملٹی نیشنل کمپنیوں نے اشتہارات دینا بند کر دیئے،جس سے یوٹیوب کو اربوں ڈالر کا نقصان متوقع ہے
جبکہ یوٹیوب انتظامیہ کا کہنا ہے وہ نا منا سب مواد اور قابل اعتراض ویڈیوکیخلاف کارروائی جا رہی
رکھے ہوئے ہے جو جلد مکمل کر لی جائیگی،تاہم اشتہارات کی بندش سے متعلق یوٹیوب انتظامیہ نے
کو ئی بات نہیںکی۔

ویڈیو بلاگرمیٹ واٹسن کی رپورٹ کے مطابق یوٹیوب پر موجود کم سن اور نابالغ بچوں کی ویڈیوز پر
جہاں نازیبا کلمات موجود ہیں وہیں خصوصی طور پر نابالغ بچیوں کی ویڈیوز پر ایسے نامناسب کلمات
کی موجودگی سے پتہ چلتاہے کمنٹس کرنیوالے افراد بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا نے کے عادی
ہیں۔

ویڈیو بلاگر کامزید کہنا تھا مختصر کپڑوں میں ملبوس کھیلتی یا دیگر کام کرتی بچیوں کی ویڈیوز پر
صرف نامناسب کمنٹس ہی نہیں بلکہ بچوں کی نازیبا ویڈیوز کی لنکس بھی شیئر کر رکھی ہیں۔جو کہ
حیران کن طور پر یوٹیوب کے الگورتھم سسٹم نے چیک کرنے کے بعد بھی نہ صرف ہٹائی نہیں بلکہ
مختصر کپڑوں میں کھیلتی کودتی نابالغ لڑکی کی ویڈیو دیکھنے والوں کو یوٹیوب کا الگورتھم سسٹم
مزید ایسی ویڈیوز دیکھنے کی تجویز بھی دیتا ہے اور ایسی ویڈیوز کو سامنے لاتا ہے جن میں کم سن
بچیاں مختصر کپڑوں میں دکھائی دیتی ہیں۔

ویڈیو اسٹریمنگ سب سے بڑی ویب سائٹ نے اپنی پالیسی کو تبدیل کرنے کے بعد قابل اعتراض، فحش،
تشدد پر مبنی، نامناسب، نفرت انگیز اور کسی کی دل آزاری کا باعث بننے والے مواد کی روک تھام بھی
کی ہے۔

ویڈیو بلاگر کی جانب سے انکشاف کے بعد یورپ، امریکہ سمیت کئی ممالک میں عوام کی جانب سے یوٹیوب
کوجہاں شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے وہیں معروف ویڈیو بلاگر میٹ واٹسن کا شکریہ ادا کیا جا رہا ہے
کہ انہوں نے اپنا بیش بہاو قت صرف کرکے یوٹیوب انتظامیہ کی اپنی ہی بنائی گئی پالیسی سے انحراف برتنے
کی نشاندہی کی اورنئی نسل کو ہوس پرستوں کانشانہ بننے سے بچانے کی سعی کی،

عوام کی تنقید کے بعد کئی ملٹی نیشنل کمپنیوں نے بھی یوٹیوب کو اربوں روپےکےاشتہارات دینا فوری طور
پربند کردیے ہیں۔ اس ضمن میں امر یکی نشریاتی ادارے’بلوم برگ‘ کا اپنی رپورٹ میں کہنا ہے میٹ واٹسن
کی تحقیقی رپورٹ منظرعام پر آنے کے بعد یوٹیوب پراپنےاشتہارات بندکرنیوالی ملٹی نیشنل کمپنیوں جن میں
نیسلے، ایمازون، ڈزنی، ایپک، لوریل، فورٹ نائٹ، مے بی لائن، میٹرو اور سنگل مسلم ڈاٹ کام سمیت دیگر
کمپنیاں شامل ہیں۔

بلوم برگ کے مطابق نیسلے کمپنی نے تو فوری ایکشن لیتے ہوئے یوٹیوب کیلئے امریکہ و یورپ میں
اشتہارات کی بندش کردی جبکہ دیگر ملٹی نیشنل کمپنیوں نے بھی یوٹیوب کو اشتہارات بند کرنے کی
تصدیق کی،جس سے یوٹیوب کو اربوں روپے کا نقصان یقینی ہوگیا۔

قارئیں …. معروف ویڈیو بلاگر میٹ واٹسن کا ویڈیو بلاگ دیکھنے کیلئے(( کلگ )) کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں