63

نوازشریف کی صحت کو نقصان ہوا تو وزیراعظم اور پنجاب حکومت ذمہ دار ہوںگے،مسلم لیگ ن

Spread the love

پاکستان مسلم لیگ (ن)کی پارلیمانی پارٹی نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی

صحت سے منظور کردہ متعلق قرار دادمنظور کرتے ہوئے صورتحال پرتشویش کا

اظہار کیاہے کہ اور کہاہے کہ وزیراعظم کی ایمااور دبائو پر پنجاب حکومت کی

مجرمانہ غفلت کی شدید مذمت کرتی ہے ،نوازشریف کو میڈیکل بورڈز کی روشنی

میں بلا تاخیر ایسے ہسپتال منتقل کیاجائے جہاں عارضہ قلب اور میڈیکل بورڈز کی

تشخیص میں تعین کردہ طبی سہولیات کا مناسب انتظام اور معالجین24گھنٹے

دستیاب ہوں۔اجلاس نے متنبہ کیا کہ اگر محمد نوازشریف کے علاج معالجے میں

غفلت اور مجرمانہ کوتاہی کے نتیجے میں اگر کوئی خطرہ یا نقصان ہوا تو اس

کے ذمہ دار وزیراعظم عمران نیازی اور پنجاب حکومت ہوں گے ۔ مسلم لیگ (ن)

نے گزشتہ روز اپنے اجلاس میں سابق وزیراعظم اوراپنے قائد محمد نوازشریف

کی صحت کو لاحق خطرات پر وزیراعظم کی ایمااور دبائو پر پنجاب حکومت کی

مجرمانہ غفلت قرار دیتے ہوئے اس امر پر گہری تشویش کا اظہار کیا کہ پنجاب

حکومت کے اپنے تشکیل کردہ پانچ میڈیکل بورڈز کی تجاویز اور تشخیص کے

باوجود میاں نوازشریف کو مناسب اور فوری علاج کی سہولت دانستہ طور پہ مہیا

نہیں کی جارہی۔ تین مرتبہ منتخب ہونے والے وزیراعظم کی صحت پر موجودہ

حکمرانوں کی جانب سے سیاست کرنا قابل مذمت اقدام ہے اور حکومت کی بدنیتی

کو ظاہر کرتا ہے ۔پاکستان مسلم لیگ (ن) مطالبہ کرتی ہے کہ محمد نوازشریف کو

میڈیکل بورڈز کی روشنی میں بلا تاخیر ایسے ہسپتال منتقل کیاجائے جہاں عارضہ

قلب اور میڈیکل بورڈز کی تشخیص میں تعین کردہ طبی سہولیات کا مناسب انتظام

اور معالجین 24گھنٹے دستیاب ہوں۔اجلاس نے متنبہ کیا کہ اگر محمد نوازشریف

کے علاج معالجے میں غفلت اور مجرمانہ کوتاہی کے نتیجے میں اگر کوئی خطرہ

یا نقصان ہوا تو اس کے ذمہ دار وزیراعظم عمران نیازی اور پنجاب حکومت ہوں

گے -اجلاس میں محمد نوازشریف سے مکمل یک جہتی کا اظہارکرتے ہوئے اس

عزم کا اظہار کیا گیا کہ پوری پارٹی اپنے قائد کے ساتھ ہے اور ان کی جلد صحت

یابی کیلئے خداکے حضور دعا گو ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں